40

زہریلی گیس کی شناخت اور اسے زائل کرنے والا انوکھا لباس

نیویارک: کچھ ماہ قبل شام کے بچوں پر کیمیائی ہتھیاروں کے حملے کی المناک تصاویر اور ویڈیو نے دنیا کو اشکبار کردیا تھا۔ ابتدائی تحقیق کے مطابق شامی افواج نے بیرل بموں میں کیمیائی مرکبات بھر کر اپنے ہی لوگوں پر برسائے تھے۔ ایسے حملوں سے بچنے کےلیے امریکی ماہرین نے ایک ایسا کپڑا بنایا ہے جس سے بنا لباس کیمیائی ہتھیار اور گیس کی شناخت کرکے ان کے اثرات زائل کرکے جان بھی بچا سکتا ہے۔
سٹی کالج آف نیویارک کے ماہرین نے ایک ایسا اسمارٹ فیبرک تیار کرلیا ہے جو نہ صرف فوری طور پر جان لیوا گیسوں کو بھانپ لیتا ہے بلکہ اسے بے اثر کرکے لوگوں کی جان بھی بچاسکتا ہے۔
کیمیا کی پروفیسر ڈاکٹر ٹریسا بینڈوز نے بتایا کہ سوتی لباس کو کچھ اس طرح تبدیل کیا گیا ہے کہ وہ خطرناک اعصابی گیس کی موجودگی میں رنگ تبدیل کرتا ہے۔ اس کے علاوہ گیس جیسے ہی لباس کو چھوتی ہے وہ لباس میں جذب ہوکر بے ضرر اجزا میں تبدیل ہوجاتی ہے اور اس کی نشانی کے طور پر لباس کا رنگ تبدیل ہوجاتا ہے۔ تاہم لباس کا بدلا ہوا رنگ یہ بھی ظاہر کرتا ہے کہ گیس کے حملے کو لباس کتنے عرصے تک برداشت کرسکتا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں